ایك شخص اپنی بہو كے ساتھ ناجائز تعلق ركھے ہوئے ہے۔ آیا بہو اس گھر میں رہ سكتی ہے


 سوال: كیا فرماتے ہیں علماء دین اس مسئلہ كے بارے میں كہ ایك شخص اپنی بہو كے ساتھ ناجائز تعلق ركھے ہوئے ہے۔ آیا بہو اس گھر میں رہ سكتی ہے اور اپنے خاوند كے ساتھ بول چال قائم ركھ سكتی ہے یا نہیں۔

 (سائل: میاں كریم بخش كھیڑا ، فاروق كالونی سرگودھا)

جواب: اگر شہوت كے ساتھ باپ نے اپنی بہو كو ہاتھ لگایا تو وہ اس كے بیٹے پر حرام ہوگئی ہے۔ اب بیٹے كو چاہیے كہ اپنی اس بیوی كو طلاق دیدے۔ اور عدت كے بعد وہ عورت كسی دوسری جگہ نكاح كرلے۔ اگر طلاق نہ دے گا تب بھی وہ بیوی اس پر حرام ہے۔ اگر پھر بھی طلاق نہ دے اور اسے بدستور اپنے گھر بستائے ركھے تو دوسرے لوگوں كو اس سے مقاطعہ كرنا ضروری ہے